گرفتاریاں ‘ مارشل لاء یا ایمرجنسی رکاوٹ نہیں بن سکتیں‘ 10ستمبر کو ہر صورت واپس لوٹوں گا۔ نواز شریف۔۔آمروں کے ساتھ کسی صورت مذاکرات نہیں کرینگے کیونکہ ان سے بات چیت ڈکٹیٹروں کا ساتھ دینے کے مترادف ہے‘ حکمرانوں نے شب خون مارنے کی کوشش کی تو سول نافرمانی اور جیل بھرو تحریک شروع کی جا سکتی ہے ۔ فوجی حکومت نے عوام کو ڈاکوں ‘ فاقوں اور ناکوں کے سوا کچھ نہیں دیا ‘ دھماکے ایمرجنسی کی راہ ہموار کرنے کیلئے کروائے جا رہے ہیں ‘ مسلم لیگ (ن) کے قائد کا فیصل آباد میں احتجاجی مظاہرہ کرنے والے کارکنوں سے ٹیلی فونک خطاب۔(تفصیلی خبر)