اوفا اعلامیے پر عملدرآمد نہ ہونے سے پاک بھارت مذاکرات نہیں ہوئے، مذاکرات کیلئے پاکستان کا ایجنڈا اوفا سمجھوتے کے عین مطابق جبکہ بھارت صرف دہشتگردی پر بات کر کے باقی تمام مسائل کو پس پشت ڈالنا چاہتا تھا، عالمی برادری کو بھارت کی طرف سے مذاکرات کی منسوخی کا نوٹس لینا پڑے گا، بھارتی ایجنسی کے پاکستان میں دہشتگردی کی کارروائیوں میں ملوث ہونے کے ہمارے پاس واضح ثبوت ہیں، پاکستان کنٹرول لائن پر بھارتی اشتعال انگیزی کے بارے میں اقوام متحدہ کو آگاہ کرے گا،جموں و کشمیر کے مسئلے کا حل نکالنا شملہ معاہدے میں شامل ہے،اگر کشمیر مسئلہ نہیں تو بھارت کی 7لاکھ فوج وہاں کیا کر رہی ہے؟

وزیراعظم کے مشیر برائے خارجہ امور سرتاج عزیزکا ٹی وی چینل کے پروگرام میں اظہارخیال