پیپلز پارٹی پر دہشت گردی کا الزام نہ لگایا جائے ،اگر ہم پر دہشت گردی کا الزام لگا تو جنگ ہو گی،جو قوانین دہشت گردی کے خلاف بنائے گئے تھے وہ پیپلز پارٹی کے رہنماؤں پر لگائے جا رہے ہیں، ہمیں یہ الزام قبول نہیں وہ چاہے کوئی ادارہ لگائے یا حکومت، پیپلز پارٹی کو انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ، نیب کو صرف پیپلز پارٹی ہی نظر آ رہی ہے،وائٹ کالر کرائمز سے قوانین کے مطابق نمٹا جائے،ہم نے ہمیشہ عدالتوں کا احترام کیا، عدالت جب بھی یوسف رضا گیلانی کو طلب کرے گی وہ پیش ہوں گے، پیپلز پارٹی کے خلاف انتقامی کارروائی اس وقت شروع ہوئی جب چیئرمین بلاول بھٹو زرداری پنجاب میں پارٹی کارکنوں سے ملاقاتوں میں مصروف تھے، مخدوم امین فہیم زندگی اور موت کی کشمکش میں ہیں، ان حالات میں ان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے گئے، کیا وہ ملک سے بھاگے جا رہے تھے؟وفاقی حکومت کسانوں کا معاشی قتل بند کرے

پیپلز پارٹی رہنما قمرزمان کائرہ ، شیریں رحمان اور فیصل کریم کنڈی کی مشترکہ پر یس کانفرنس