کسی ادارے کو مقررہ حدود سے تجاوز کی اجازت نہیں‘ اختیارات کی تقسیم کا حصول جمہوریت کی بنیاد ہے‘ عدلیہ کی کوشش ہے کہ ایسا حکم دے جس سے غیر قانونی اقدامات کی تصحیح ہو‘ مقدمات کے فیصلے میں تاخیر سب سے زیادہ تکلیف دہ بات ہے‘ حصول انصاف میں تاخیر سے غریب اور نادار طبقے پر انتہائی برا اثر پڑتا ہے‘ آئین کی بالادستی ‘قانون کی حکمرانی اور عوام کے حقوق کے تحفظ میں بار کا کردار اہم ہے‘ اکیسویں آئینی ترمیم پر حالات کے مطابق بہتر فیصلہ دیا

چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس انور ظہیر جمالی کاسپریم کورٹ میں نئے عدالتی سال کے موقع پر تقریب سے خطاب