سینیٹ کے اجلاس میں پی آئی اے کی نجکاری کے حوالے سے اپوزیشن ارکان اور حکومتی ارکان کے درمیان شدید بحث, تند و تیز جملوں کا تبادلہ،مشاہد اﷲ خان کا اپوزیشن اراکین کو بھرپور جواب

آئی اے کی نجکاری کے خلاف ہڑتال غیر قانونی تھی، لازمی سروس ایکٹ 2011 میں بھی پیپلز پارٹی نے لگایا تھا ، احتجاج کرنے والوں پر تشدد کیا گیا تھا، ہڑتال سے پی آئی اے 750 فلائٹس منسوخ ہوئیں اور اربوں کا نقصان ہوا، ہڑتال کرنے والوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے والوں، ہڑتال سے متاثر ہونے والوں سے بھی اظہار یکجہتی کرنی چاہیے،مسلم لیگ (ن) کے رہنما سینیٹر مشاہداﷲ کا سینیٹ اجلاس میں خطاب , مشاہد اﷲ کو اونچی آواز میں اور سینہ تان کر بات کرتے ہیں ،بہتر ہے کہ دلیل کے ساتھ نرم انداز میں بات کریں، یہ انداز سینیٹ کی اولیت کے خلاف ہے، حکومت نے جس طرح آئی پی پیز کے بغیر آڈٹ کے 480ارب ادا کئے، اسی طرح پی آئی اے کو خسارہ سے نکالنے کیلئے 250ارب کا بیل آؤٹ پیکج دے اور نج کاری نہ کرے، قائدحزب اختلاف سینیٹر اعتزازا ور دیگرکااظہار خیال