سابق وزیراعلیٰ سندھ کے بیٹے کے محکمہ صحت میں مبینہ لاکھوں روپے رشوت لیکر بھرتی کیے گئے ملازمین تین سال گزجانے کے باوجود تنخواہوں سے محروم ،ملازمین کی بھوک ہڑتال ،بھرتیاں غیرقانونی اور جعلی ہیں ، 2سال قبل کی گئی انکوائری میں ڈی سی او اور سیکرٹیری صحت کا اعتراف ،سابق وزیراعلیٰ کے بیٹے کے خلاف کوئی کاروائی نہیں ہوئی