لاہور ‘ مسیحی عبادت گاہ کے باہر فائرنگ‘ دو خود کش دھماکے‘ دو پولیس اہلکاروں ‘ دو بھائیوں سمیت 14افراد جاں بحق ،

بچوں اورمرد و خواتین سمیت 65سے زائد زخمی ،کئی زخمیوں کی حالت تشویشناک ہونے کے باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ , مسیحی اکثریتی آبادی یوحنا آباد میں کیتھڈرل ، کرائسٹ چرچ میں دعائیہ تقریبات کے دوران دو مشکوک افراد نے زبردستی چرچ میں داخل ہونے کی کوشش کی سکیورٹی گارڈز کی روکنے کی کوشش پر اچانک دھماکہ ہو گیا ‘ اس دوران فائرنگ کی آواز بھی آئیں ‘ چند ہی لمحوں بعد ایک دوسر ادھماکہ ہوگیا ، , مشتعل مظاہرین نے جائے وقوعہ سے دو مشتبہ افراد کو پکڑ کر بد ترین تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد زندہ جلا دیا ، , پولیس اور بم ڈسپوزل سکواڈ کو جائے وقوعہ پر آنے سے روکدیا اور پتھراؤ کیا ،مشتعل مظاہرین نے فیروز روڈ اور میٹرو بس ،سروس کو بھی بند کر دیا اور گاڑیوں پر پتھراؤ کر کے شیشے توڑ دئیے ،کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان جماعت الحرار نے دھماکوں کی ذمہ داری قبول کر لی، , صدر مملکت ممنو ن حسین‘ وزیر اعظم محمد نواز شریف ‘ قائمقام گورنر رانا اقبال اوروزیر اعلیٰ شہباز شریف سمیت دیگر کی شدید مذمت، , وزیر اعظم نواز شریف نے وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف‘ وفاقی وزیر داخلہ نے آئی جی پنجاب سے رپورٹ طلب کر لی