لاہور‘یوحنا آباد میں 2خود کش دھماکوں میں 15افراد جاں بحق ‘65سے زائد زخمی‘مشتعل افراد نے 2مشتبہ افراد کو تشدد کر کے ہلاک کرنے کے بعدلاشیں آگ سے جلا دیں،جاں بحق ہونے والوں میں 2پولیس اہلکار ‘ میاں بیوی اور 2سگے بھائی بھی شامل ہیں‘وزیراعظم ‘وزیراعلیٰ پنجاب اور وفاقی وزیر داخلہ نے متعلقہ حکام سے دہشت گردی کے واقعہ کی رپورٹ بھی طلب کرلی‘وزیر اعلی کاجاں بحق افراد کیلئے 5لاکھ اور زخمیوں کیلئے 75ہزار فی کس امداد کا اعلان ‘لاہور دہشتگردی کیخلاف مسیحی برادری کے ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے،میٹرو بس سروس کا روٹ بھی مظاہرین نے بند کردیا ‘پرائیویٹ اور سرکاری گاڑیوں پر بھی پتھراؤ ‘ وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ کامران مائیکل ‘کمشنر لاہور ، ڈی سی او ، ڈی آئی جی آپریشنز سمیت پولیس کے افسران سے لاہور میں مسیحی برادری کے مظاہرین کا ٹکراؤ ‘ملزمان کی گرفتاری تک احتجاج ختم کرنے سے انکار کر دیا،واقعہ پر شدید افسوس ہے ‘ دہشتگردوں نے پھر معصوم اور بے گناہ لوگوں کو نشانہ بنایا ، حکومت معصوم لوگوں کی زندگیوں سے کھیلنے کی اجازت کسی کو نہیں دیگی ‘ان سے قانون کے مطابق سلوک کیا جائے گا ‘تر جمان پنجاب حکو مت کی میڈیا سے گفتگو