قومی سانحات کی تحقیقات کے لئے قومی کمیشن فار ٹروتھ کی تشکیل کی ضرورت ہے ، مکمل تحقیق کے بعد سربستہ رازوں سے پردہ اٹھا یااور قوم کو اعتماد میں لیاجائے،حکومت فوری طور پر بااعتماد لوگوں پرمشتمل یہ قومی کمیشن لیاقت خان کی شہادت ،پاکستان کے دولخت ہونے ،ضیاء الحق کے طیارہ حادثے سمیت اوجڑی کیمپ ، لال مسجد آپریشن اورسوات میں لڑکی کو کوڑے مارنے کی جعلی ویڈیوجیسے واقعات کے متعلق واضح اور دو ٹوک انداز میں حقائق قوم کے سامنے رکھے ، اے پی سی بلا کر حکومت امن کے قیام کیلئے اپنی اب تک کی کارکردگی کا جائزہ پیش کرے ، برسراقتدار رہنے والوں نے عوام کو اندھیرے میں رکھ کراپنے مینڈیٹ کی توہین کی ،جھوٹ اگر ایک فرد کیلئے ناجائز ہے تو وہ حکمرانوں ،سیاستدانوں،میڈیا اور ریاست کیلئے کیسے جائز ہوسکتا ہے، ایکشن پلان کو ایک سال گزر گیا، حکومت نے قومی قیادت کے سامنے کئے گئے وعدوں پر ابھی تک عمل درآمد کا آغاز نہیں کیا

امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کاسینیٹ اجلاس سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو