عوام کے جان و مال کے تحفظ کی کوئی گارنٹی نہیں‘عام آدمی کو راہ چلتے قتل کردیا جاتا ہے‘ملک و قوم کو عالمی استعمار کا اسیر اور عالمی خفیہ ایجنسیوں کا دنگل بنا دیا گیا ہے‘ ریمنڈ ڈیوس جیسے قاتل کو پروٹوکول کے ساتھ ملک سے بھگا دیا جاتا ہے اور قانون نافذ کرنے والے ادارے منہ تکتے رہ جاتے ہیں ‘امریکی ڈکٹیشن پر چلنے والے حکمران عوام کو اندھیرے میں رکھ کر قومی مفادات کا سودا کرتے ہیں ‘کرپشن اور کمیشن کلچر نے ملکی معیشت کو تباہی کے دھانے پر پہنچادیا ہے‘بیرون ملک بڑی بڑی جائیدادیں بنانے والے حکمران اپنا سرمایہ قومی بنکوں میں لے آئیں تو آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کے قرضے اترسکتے ہیں اور عوام کو زندگی کی تمام سہولتیں مفت مہیا کی جاسکتی ہیں‘اقتدار میں آکر قومی دولت لوٹنے والوں کے گریبانوں سے پکڑ کر ایک ایک پائی کا حساب لیں گے ‘عام آدمی غربت کی چکی میں پس رہا ہے اور حکمران عیش و عشرت کی زندگی گزار رہے ہیں‘مہنگائی بے روز گاری بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن بنادی ہے، امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق کا منصورہ میں تر بیتی کنونشن سے خطاب