سندھ میں فرقہ وارانہ فسادات کرانے کی سازش کی جارہی ہے‘ فسادات میں بیرونی ہاتھ کا ملوث ہونا خارج از امکان نہیں‘حکومت کے پاس دہشتگردی سے نمٹنے کیلئے ماہرین کی کمی ہے‘دھماکے انٹیلی جنس اداروں کی ناکامی ہیں‘ بروقت اطلاع ملے تو کنٹرول کیا جاسکتا ہے‘جیکب آباد اور شکارپور بم دھماکہ کسی کی نااہلی نہیں ہم دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں، پشاور میں اتنے دھماکہ ہوئے کسی نے نہیں کہا کہ یہ کسی کی کمزوری ہے ، بلوچستان اور پنجاب میں بھی دہشت گردی ہورہی ہے ، وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی بم دھماکے میں زخمی درگاہ کے سجادہ نشین کی عیادت کے بعد میڈیا سے بات چیت