یمن کے معا ملے پروزیراعظم پا رلیمنٹ کو اعتماد میں لیں، جب دیگر معا ملات پر آل پا رٹیز کا نفرنس ہو سکتی ہے تو سعودی عرب فو ج بھیجنے کے معا ملے پے اے پی سی کیو ں نہیں ہو سکتی، کسی سیا سی جما عت کو انتقامی کا روائی کا نشا نہ نہیں بننے دوں گا، اگر ایسی کوئی صورتحال ہوئی تو اس جما عت کے ساتھ کھڑا ہو جا وٴں گا، ایم کیو ایم کے ساتھ مذکرات کئے جا ئیں، اسے دیوار سے نہ لگا یا جا ئے

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ کی سکھر میں صحافیوں سے گفتگو