وزراء کو پابند کریں گے کہ وہ اپنے اپنے حلقوں سے باہر نکلیں اور اپنے قبیلوں ،برادریوں کو چھوڑ کرکارکنوں پرتوجہ دیں‘حکومت نے آزادکشمیر کو فلاحی ریاست میں بدلنے کیلئے بھرپور انداز میں کام کیا ‘تعلیم و صحت کی سہولیات اور ذرائع رسل ورسائل میں بھرپور انداز میں کام ہوا ہے جس کی مثال میڈیکل کالجز، پانچ یونیورسٹیاں اور ہزاروں کلومیٹر سڑکات واضح ثبوت ہیں ‘ آزادکشمیر میں تنقید برائے تنقید ایک روایت بن چکی ہے ‘سکندر حیات کو پہلے بھی اپنے حلقہ میں شکست ہوئی اور آئندہ بھی شکست ہوگی اسی لیے چیخ وپکار ہورہی ہے

وزیر اعظم آزادکشمیرچوہدری عبدالمجیدکی پی ایس ایف اورپی وائی او کے عہدیداران وکارکنان کے وفود سے گفتگو