چھوٹے بچے جیلوں میں اور بڑے ڈاکو اسمبلیوں میں ہیں ،ہم شریفوں اور زرداریوں کا پاکستان نہیں چاہتے ،چور چور کا احتساب نہیں کر سکتا،زرداری کو پتہ تھا کہ شیر شیر کا شکار نہیں کرے گا، نواز شریف کی ڈکٹیٹر شپ پرویز مشرف کی آمریت سے زیادہ بڑی ہے ،میچ کھیلنے کیلئے اپنا امپا ئر لانے سے انکی عادتیں بگڑیں، نواز شریف نیوٹرل میچ کے عادی ہوتے تو سیاست بھی غیر جانبدارانہ کرتے، سندھ اور پنجاب کے بلدیاتی انتخابات میں دھاندلی ہوئی، دھاندلی والے نہ پکڑے گئے تو ظلم میں اضافہ ہو گا، قانون کی بالادستی اور منصفانہ نظام چاہتے ہیں ، ،ہم شریفوں اور زرداریوں کا نہیں اقبال اور جناح کا پاکستان چاہتے ہیں،جب تک زندہ ہوں کبھی اپنی قوم کو اکیلا نہیں چھوڑوں گا ، میرے پاس کوئی سرکاری عہدہ نہیں ، پھر بھی مجھے جلسہ گاہ آنے سے روکا گیا، پی ٹی آئی کا منشور لے کر عوام کے سامنے آیا ہوں

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا ترامڑی چوک میں انتخابی جلسہ سے خطاب