موجودہ وفاقی حکومت نے مہنگائی اور تنخواہوں میں توازن برقرار نہیں رکھا‘ ہر چیز مہنگی ہورہی ہے اگر کچھ سستا ہے تو اس کا عوام کو فائدہ نہیں مل رہا‘ میاں صاحب تیل کی قیمتوں میں کمی کا عوام کو لالی پوپ دیتے رہتے ہیں‘ بجلی کی لوڈشیڈنگ تین ماہ میں ختم کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا، اب وزیراعظم 2018ء میں لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا دعویٰ کررہے ہیں‘ حکومت ہر تیسرے ماہ نیا بجٹ پیش کردیتی ہے‘ وفاقی حکومت کے پاس صرف پلان ہے عمل درآمد کچھ بھی نہیں ہورہا

قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ کی سولر انرجی موٹر پمپ منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد میڈیا سے گفتگو