پاکستان دہشتگردی کو پراکسی وار کے طور پر استعمال کر رہا ہے ‘اقوام متحدہ میں افغانستان کے مستقبل نمائندے کی ہرزہ سرائی

دہشتگردی کا پراکسی وار کے طو رپر استعمال دونوں ممالک مابین اعتماد کی کمی کا باعث بن رہا ہے ‘جو دہشتگردوں کو سانس لینے کیلئے آکسیجن فراہم کرتا ہے‘پاکستان نے افغانستان کے بھارت کے ساتھ سول اور فوجی تعلقات میں تیزی سے اضافے پر غیر ضروری تشویش کا اظہار کیا ،افغانستان حقانی نیٹ ورک ،القاعدہ ،داعش ،حکمت یار کے دھڑے سمیت دیگر غیر ملکی انتہا پسند دہشتگرد گروپوں کے حملوں کی زد میں ہے ‘محمود سیکال کاجنرل اسمبلی سے خطاب