جب موجودہ حکومت آئی تو زرمبادلہ کے ذخائر سات آٹھ ارب ڈالر تھے ،عرفان صدیقی

غیر ملکی قرضوں کی اقساط کی ادائیگی کے بعد لگتا تھا ملک دیوالیہ ہوجائے گا جس پر آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا ،وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے قومی امور