قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی قومی تحفظ خورا ک وتحقیق نے پلانٹس بریڈرز رائٹس بل 2016ء کی متفقہ منظوری دیدی

بل پر 2005ء میں کام شروع کیا گیا ، گزشتہ حکومت نے ا س پر سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیا ، 5 سال میں کوئی پیش رفت نہیں کی ‘ موجودہ حکومت نے وسیع مشاورت کی،اس میں نجی شعبے کو بھی تحفظ دیا گیا ہے ، بل منظو رہونے سے بین الاقوامی سرمایہ کاری کا راستہ کھل جائے گا اور ان کی سرمایہ کاری کو قانونی تحفظ ملے گا‘ وفاقی وزیر سکندر بوسن کی بریفنگ