عمران خان نے ایک مرتبہ پھر ملکی مفادات کے خلاف قدم اٹھاتے ہوئے ترکی کے منتخب صدر کی آمد پر پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے بائیکاٹ کا اعلان کیا ‘عمران خان کی سیاست انا ‘الزام تراشی ‘گالم گلوچ سے شروع ہوتی ہے اور وہی پر ختم ہوجاتی ہے‘ وزیراعظم محمد نواز شریف نے پانامہ کے معاملے کے بعد پارلیمنٹ میں جو موقف پیش کیا تھا ‘آج بھی اسی موقف پر قائم ہیں ‘قطر والی بات عدالتی کیس کے لئے محفوظ رکھی گئی تھی ‘اگر مخالفین ہماری بات سے اتفاق نہیں کرتے تو وہ ثبوت عدالت میں لے آئیں

پاکستان مسلم لیگ ن کے راہنمائوں کی پریس کانفرنس