آل پارٹیز کانفرنس کے فیصلوں پر من و عن عمل درآمد جاری ہے،اقتصادی راہداری کسی ایک صوبے کا نہیں بلا تفریق ملک کے طول و عرض میں رہنے والے عوام کی فلاح و بہبود کیلئے شروع کیا جانیوالا ترقی کا منصوبہ ہے ، ا س منصوبے میں کسی صوبے یا علاقے کے ساتھ امتیازی سلوک کا تصور تک نہیں کیا جاسکتا ، وزاعظم کے قومی قیادت سے کئے گئے وعدوں کی روشنی میں مغربی روٹ پر ترجیحی بنیادوں پر کام جاری ہے، حسب وعدہ یہ روٹ 2018تک مکمل ہوگا

وزارت منصوبہ بندی کے ترجمان کا سی پیک بارے جماعت اسلامی کی اے پی سی کے اعلامیے پر ردعمل