اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات کے تحت اسلامی قوانین وضع کئے جائیں ، مولانا فضل الرحمن، بندوق کے زور پر شریعت نافذ کرنا جرم ہے تو پارلیمنٹ میں بیٹھ کر جان بوجھ کر اسلامی قوانین میں رکاوٹ ڈالنا بھی اتنا ہی بڑا جرم ہے ، حکومت نے ناقص پالیسیوں کی وجہ سے طالبان اور ریاست کو برابر کھڑا کردیا ہے ، اور ہاں اور ناں کا اختیار بھی طالبان کو فراہم کردیا ہے ، تحریک طالبان پاکستان کی بجائے تمام متحارب گروپوں سے بات کی جائے ، مدا رس کیخلاف کوئی قانون منظور نہیں ہونے دینگے حکومت فوج کو آن بورڈ نہیں لے سکی مگر فوج نے شای دحکومت کو آن بورڈ لے لیا ہے ، طاقت کا استعمال کسی مسئلے کا حل نہیں ، طاقت کے استعمال پر حکومت کی حمایت نہیں کرسکتے ،حکومت مشیروں کی بجائے اتحادیوں کو اعتماد میں لے ، نیکٹا کسی مسئلے کا حل نہیں اس سے اداروں میں ٹکراؤ بڑھ جائے گا ،سربراہ جے یو آئی ف کا قومی اسمبلی میں قومی و داخلی پالیسی پر بحث کے دوران اظہار خیال