وزیراعظم کا نیکٹا کے ماتحت انٹیلیجنس ڈائریکٹوریٹ اور ریپڈ رسپانس فورس کے قیام کا حکم ، ملک کی خوشحالی امن سے جڑی ہوئی ہے،چاروں صوبائی حکومتیں اور تمام ادارے ملک میں امن و امان کی صورت حال کو بہتر بنانے، دہشت گردی کے خاتمے کے لیے بھرپور کوشش اور سخت محنت کریں،نوازشریف کا اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب ،اجلا س میں داخلہ سلامتی پالیسی سے متعلق مکمل ا تفاق رائے کا اظہار ،دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے چاروں صوبوں کو مزید وسائل کی فراہمی کا فیصلہ، ہر صوبے کو ایک ایک بم ڈسپوزل گاڑی دی جائے گی، وزیر داخلہ کی داخلی سلامتی سے متعلق مختلف اْمور پر شرکا ء کو بریفنگ، طالبان قیدیوں کی فہرست کے حوالے سے سارے معاملات کمیٹی کے پاس ہیں،وہ بہت جلد اپنی پیش رفت سے آگاہ کریں گے، میڈیا انتظار کرے،پرویز رشید کی میڈیا سے گفتگو، چاروں صوبوں، وفاق اور فوجی قیادت نے نئی قومی سلامتی کی داخلی پالیسی پر مکمل اتفاق رائے کا اظہار کیا ہے، چوہدری نثار ،وزارت داخلہ کے تحت انٹیلی جنس اداروں کے درمیان مربوط رابطے کیلئے مشترکہ ڈائریکٹوریٹ قائم کیا جائے گا،میڈیاسے گفتگو