مبینہ قیدی طالبان جنگجووٴں کے اہل خانہ ہیں،پروفیسر ابراہیم ، عسکریت پسندوں کی طرف سے فراہم کردہ 300 افراد کی فہرست میں ملا فضل اللہ کے سسر اور صوفی محمد شامل نہیں، مولانا صوفی محمد کی رہائی کا معاملہ مختلف ہے، شدت پسندوں کی طرف سے مذاکرات جاری رکھنا ان مبینہ قیدیوں کی رہائی سے مشروط نہیں، طالبان کے نامزد کردہ ایک مذاکرات کار کی امریکی نشریاتی ادارے سے گفتگو ،حکومت اور طالبان کے درمیان براہ راست مذاکرات کیلئے تاحال جگہ کا تعین نہ ہو سکا،قوم مطمئن رہے ،جلد خوشخبری سننے کو ملے گی ،مولانا یوسف شاہ،براہ مذاکرات کیلئے حکومت کو تین مقامات کے نام تجویز کئے ہیں، پروفیسر ابراہیم