وزیراعظم کا ہیگ میں مصروف ترین دن ، امریکہ ،چین ،ترکی اورفرانس کے صدور، امریکی وزیر خارجہ سے ملاقاتیں ،دوطرفہ تعلقات اورباہمی دلچسپی کے امورپرتبادلہ خیال ، پاک بھارت مسائل حل ہونے چاہئیں،مسئلہ کشمیر کے حل میں بھارت ہچکچاہٹ کا شکار ہے، کسی تیسری قوت کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے، وزیراعظم ،پاکستان ذمہ دار جوہری ریاست ،نیوکلےئر سپلائر گروپ سمیت تمام برآمدی معاہدوں میں شریک کیا جائے،نواز شریف کا جوہری سلامتی کانفرنس میں مطالبہ،40سال سے ایٹمی بجلی گھر چلا رہے ہیں،تحفظ کی صلاحیت اور افرادی قوت موجود ہے،جوہری دہشتگردی کے خطرے سے بچنے کیلئے سب کو ملکر کام کرنا ہوگا، سی پی پی این ایم کی 2005ترمیم کی توثیق پر غور کا اعلان، وزیراعظم نوازشریف کا دی ہیگ میں تیسری جوہری سلامتی کانفرنس سے خطاب