تھر کی صورت حال کے حوالے سے حکومت سندھ اور اس کے کسی افسر کی کوئی کوتاہی ، غفلت یا نااہلی نہیں ہے ،قائم علی شاہ،خشک سالی اور قحط کے اثرات سے اموات ہوتیں تو 10 سال سے اوپر کے لوگ بھی مرتے ، 10 سال سے کم عمر بچوں کی اموات کے دیگر اسباب ہیں، 2013ء میں 193 بچے ہلاک ہو ئے لیکن کسی نے تنقید نہیں کی کیونکہ اس وقت نگران حکومت تھی اور اس نے لوگوں کو خوراک اور دیگر امدادی اشیاء بھی نہیں دی تھی، ہم نے تھر کے لوگوں کی خدمت کی لیکن ہمیں بلا وجہ مورد الزام ٹھہرایا گیا ،سندھ اسمبلی میں تھر کی صورت حال پر تحریک پر بحث کو سمیٹتے ہوئے اظہار خیال