ڈیڑھ ارب کی گرانٹ دوست ملک کی طرف سے تحفہ ہے، یہ ناقابل واپسی ہے اس پر منفی بیانات اچھی بات نہیں ہے ، اسحاق ڈار ،توانائی بحران، دہشت گردی کے خاتمے اور معیشت کی بحالی کے لئے سب کو مل کر کام کرنا چاہیے، آئندہ چند سال ذاتی منفی سیاست کو بالائے طاق رکھ کر ان بحرانوں سے ملک کو نکالنے کے لئے سوچنا ہوگا،حکومتی حکمت عملی سے برآمدات میں اضافہ ہوا ہے ،اب دوسرے ممالک پاکستان میں سرمایہ کاری میں دلچسپی لے رہے ہیں ،میکرو اکنامک استحکام کے لئے ملکر کام کرنا ہوگا ،بہتری آرہی ہے ہم آگے بڑھ رہے ہیں، وزیر خزانہ کا قومی اسمبلی میں ملک کی اقتصادی صورت حال اور آئندہ کے اہدا ف کے حوالے سے پالیسی بیان