قومی اسمبلی کی امور داخلہ کمیٹی میں تحفظ پاکستان بل کثرت رائے سے منظور،اپوزیشن کی ترامیم مسترد،پی پی ، تحریک انصاف ، ایم کیو ایم،جے یو آئی (ف)اور جماعت اسلامی کی طرف سے مخالفت، تہمینہ دولتانہ اور ایم کیو ایم کے اراکین میں شدیدجھڑپ ، جب تک وزیراعظم مولانا فضل الرحمن کو اعتماد میں نہیں لینگے ہم مخالفت جاری رکھیں گے،ارکان جے یو آئی، تحریک انصاف کا فوج کو شہریوں کو گرفتار کرنے کا اختیار دینے ، ایک عدالت میں جاری کیس کو بند کرکے خصوصی عدالت میں منتقل کرنے سمیت دیگر شقوں پر اختلاف، بل دہشتگردوں کیخلاف کارروائی کیلئے لایا جارہا ہے،ہرشہری کو آرٹیکل 10 کے تحت تحفظ حاصل ہے، بلیغ الرحمان، آئین میں خفیہ اداروں کی جانب سے کسی کو اٹھانا ہو تو طریقہ کار دیا گیا ہے کوئی قانون سازی آئین کیخلاف نہ ہوگی ، خدشات بے بنیاد ہیں،صحافیوں سے بات چیت