دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کہلوانے والا بھارت سماجی ویب سائیٹس پر قدغن لگانے میں سب سے آگے، جولائی سے دسمبر 2013 کے دوران دنیا کے مختلف ممالک کی جانب سے ویب سائیٹ پر پوسٹ کئے گئے مواد کو مقامی قوانین کی خلاف ورزی قرار دے کر اسے ہٹوایا یا محدود کیا گیا،مقامی قوانین کو جواز بنا کر ویب سائیٹ کے حکام کو سائیٹ پر پوسٹ کئے گئے مذہبی یا ریاست مخالف مواد پر پابندی لگانے یا ہٹانے کے لئے 4 ہزار 765 مرتبہ کہا، دوسرے نمبر پر ترکی نے 2ہزار 14 مرتبہ مواد ہٹانے کے لئے کہا۔ تیسرے نمبر پر پاکستان ہے جس نے 162 مرتبہ فیس بْک پر مواد کو ہٹانے یا محدود کرنے کے لئے کہا،سماجی رابطے کی ویب سائیٹ ’‘فیس بک“ کی جانب سے جاری رپورٹ میں انکشاف