قومی اسمبلی کی مواصلات کمیٹی نے این ایچ اے ، موٹروے پولیس اور پاکستان پوسٹ میں گزشتہ 5سالوں کے دوران ہونیوالی بھرتیوں کی رپورٹ مانگ لی،جو کمپنی ٹول پلازوں کو کمپیوٹرائزڈ نہ کرے ان کے معاہدے منسوخ کرنے کی ہدایت ،لیاری ایکسپریس وے ، نوابشاہ وین حادثے اور حب میں بس حادثات پر انکوائری رپورٹس بھی،نئی انکوائری کا حکم دیدیا،موٹروے پر 58ٹن وزن کی اجازت ہے، ٹرانسپوٹرز کی ہڑتال اور سیاسی اثرو رسوخ پر 80 ٹن وزن غیر سرکاری طور پر لے جانے کی اجازت دیدی گئی ہے، 3 بار مسلسل چالان ہونے پر لائسنس 6ماہ کیلئے معطل کردیا جائیگا، آئی جی موٹروے کی کمیٹی کو بریفنگ