تنخواہوں میں اضافہ کا بجٹ کے قریب جاکر فیصلہ ہوتا ہے، اسحق ڈار،میں نے ٹیکس نیٹ بڑھانے کی بات کی ہے اسے ٹیکس میں اضافہ قرار دیدیا گیا،روپے کی قدر میں اضافے کے بعد قرضوں میں 800 ارب روپے کی کمی ہوئی ہے، اس وقت پوری دنیا ہماری اقتصادی اصلاحات کو سراہ رہی ہے،قوم کو یقین دلاتے ہیں کہ ان کا ایک ایک پیسہ ایمانداری سے خرچ ہوگا، عمومی ڈائریکٹری 30اپریل تک شائع کر دینگے ،وزیرخزانہ کاایف بی آر کانفرنس سے خطاب