سپریم کورٹ میں بلوچستان بدامنی کیس کی سماعت،وزارت دفاع سے بلوچستان میں لاپتہ افراد کی گمشدگی میں ملوث آرمی افسران کیخلاف آرمی ایکٹ کے تحت کارروائی کی تمام تر تفصیلات طلب،خضدار میں اجتماعی قبروں سے ملنے والی لاشوں کی ڈی این اے رپورٹ 6 مئی تک حکومت پنجاب کی فرانزک لیبارٹری سے طلب،صوبے میں امن و امان کی بحالی ریاست کی آئینی و قانونی ذمہ داری ہے‘جسٹس ناصر الملک، آئے روز ہونے والے واقعات تشویشناک ہیں جنہیں نظرانداز نہیں کرسکتے‘ لاپتہ افرادکیس میں ملوث عناصر کو بھی قانون کے مطابق سزا ملنی چاہئے،ریمارکس،جب تک ملک میں آئین و قانون کی عملداری نہیں ہوگی مسائل حل نہ ہوں گے، بلوچستان جل رہا ہے اور کسی کو پرواہ بھی نہیں،جسٹس انور ظہیر جمالی