بون‘ جنیوا اور روم میں پاکستانی سفارتی مشن مختلف بنکوں سے قرضہ لیتے رہے اور قرض پر ایک سال میں چار کروڑ کا سود ادا کیا گیا‘پی اے سی کی ذیلی کمیٹی میں انکشاف،کمیٹی نے دس سال کے دوران ادا کردہ سود کی تفصیلات طلب کرلیں، 1995-96ء میں 22 لاکھ روپے کی خریدی گئی کتابیں لائبریری میں موجود ہی نہیں،آڈٹ حکام کی بریفنگ،کمیٹی نے لائبریرین کو بھی طلب کر لیا