خارجہ پالیسی میں کنفیوژن پائی جاتی ہے اس کنفیوژن کو دور کرنا ضروری ہے، فرحت اللہ بابر ، وزیراعظم ، سرتاج عزیز ، طارق فاطمی وزیر داخلہ اور وزیراعلیٰ پنجاب فارن آفس پر کام کررہے ہیں ،تاریخ میں پہلی بھی ایسا ہوا کہ ایک صوبے نے دوسرے ملک کے صوبے سے وزارت خارجہ کے بغیر معاہدہ کیا، اس سے اداروں کی حوصلہ شکنی ہوگی ، افغانستان میں نئی حکومت آنے کے بعد امن کی امید ہے پاکستان کو کسی ملک میں مداخلت نہیں کرنی چاہیے،خطے میں امن کے بغیر پاکستان میں امن نہیں ہوگا ، پرانے ٹریک ریکارڈ کو چھوڑ کر نئی پالیسی کا آغاز کرنا ہوگا، سینٹ میں خارجہ پالیسی بارے تحریک پر ارکان کی بحث