سپریم کورٹ میں آٹے کی قیمتوں میں اضافے کے حوالے سے درخواست کی سماعت، عدالت نے فوڈ سکیورٹی وزارت کی جانب سے آٹے قیمتوں بارے جائزہ رپورٹ مستردکردی ، وفاق اور صوبوں کو اس حوالے سے تحقیقات پر مبنی رپورٹ مرتب کرکے 2 مئی تک عدالت میں پیش کرنے کا حکم، آرٹیکل 9 اور 14 کے تحت ریاست شہریوں کو بنیادی ضروریات زندگی کی فراہمی اور معیار زندگی بلند کرنے کی ذمہ دار ہے‘ جسٹس جواد ایس خواجہ، آٹا افغانستان اور ایران سمگل ہورہا ہے،راولپنڈی سمیت مختلف شہروں میں 20 کلو آٹے کا تھیلا 1150 روپے میں فروخت ہورہا ہے، غریب آدمی کی زندگی کا معاملہ ہے‘ حکومت پنجاب بتائے کہ کیا سب کچھ ٹھیک ہے اور سب کے بچوں کو 2350 کیلوریز خوراک مل رہی ہے اور کوئی بھوک نہیں سوتا ہے؟ سماعت کے دوران ریمارکس