پاکستان کا ایٹمی اثاثوں کے حوالہ سے بعض بیانات پر تشویش کا اظہار، ثبوت کے بغیر سیمیناروں میں بات کردی جاتی ہے یہ پاکستان کیخلاف پروپیگنڈے کا حصہ ہیں ، ترجمان دفتر خارجہ، سعودی عرب کو ایٹمی توانائی دینے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ، پولیو کے حوالے سے پاکستان پر پابندی نہیں لگائی گئی صرف سفارشات پیش ہوئی ہیں، جعلی مہم کی وجہ سے پاکستان پر اس کا منفی اثر پڑا ، اقوام متحدہ کی ایجنسیاں بھیاستعمال ہوئیں،بھارت کی جانب سے زائرین کو ویزے نہ دینا 1994ء کے معاہدے کی خلاف ورزی ہے پاکستان تمام زائرین کو مکمل سہولیات میسر کرتا ہے بھارت بھی تعاون کرے،ترجمان دفتر خارجہ تسنیم اسلم کی ہفتہ وار بریفنگ