ایک مولانا نے


جمعرات اپریل

ایک مولانا نے ایصال ثواب کی خاطر مسجد کے بیرونی دروازے پر یہ تحریر لکھ کر ٹانگ دیا۔ ”میرا پیارا بھائی احمد آج صبح اس جہاں فانی سے جنت الفردوس کی جانب کوچ کر گیا۔ دعا کیجئے کہ اللہ تعالیٰ مغفرت فرماتے ہوئے اسے اعلیٰ و عمدہ مقام عطا فرمائے۔“ دوسرے دن جب وہ مولانا مسجد میں داخل ہونے لگے تو اس کی نگاہ بے ساختہ اپنی تحریر پر پڑی جہاں نیچے کسی نے مندرجہ ذیل فقرہ لکھ دیا تھا۔

(خبر جاری ہے)

”ازجنت الفردوس! احمد صاحب ابھی تک نہیں پہنچے‘ ہمیں سخت تشویش ہے۔ اگر وہ بروقت نہ پہنچ سکے تو مجبوراً ان کا پورشن کرائے پر اٹھانا پڑے گا۔“




متعلقہ عنوان

مزاح

متفرق مزاح